مسلسل بارش سے تلنگانہ میں سبزیوں کی فصلوں کو نقصان

مسلسل بارش سے تلنگانہ میں سبزیوں کی فصلوں کو نقصان

حیدرآباد:گزشتہ ایک ہفتہ کے دوران ہوئی مسلسل بارش کے نتیجہ میں تلنگانہ میں سبزیوں کی فصلوں کو شدید نقصان پہنچا ہے ۔کئی فصلیں پانی میں محصور ہوگئیں جس سے کسانوں کا بڑے پیمانہ پر نقصان ہوا۔شہر حیدرآباد کے متصل اضلاع میں 30ہزارایکڑ پر پھیلی فصلوں کو نقصان ہوا ہے ۔
ٹماٹر،کدو،کریلاسمیت کوتمیر،پالک اور دیگر فصلوں کو بارش سے شدید نقصان پہنچا۔ریاست کے اضلاع رنگاریڈی، میدک، وقارآباد،سنگاریڈی،نلگنڈہ کے کسا ن سبزیوں کو اگاکر ان کو حیدرآباد منتقل کیاکرتے تھے ۔
حالیہ مسلسل بارش کے نتیجہ میں ان اضلاع میں 30ہزارایکڑپر پھیلی فصلوں کو نقصان پہنچاجس کے نتیجہ میں کسانوں کو کئی لاکھ روپئے کا نقصان ہوا۔اس نقصان پر قبل ازیں محکمہ باغبانی کی جانب سے مدد کی گئی تھی۔
سبزیوں کو اگانے پر بارش کے نتیجہ میں ہونے والے نقصان پر حکومت کی جانب سے کوئی مدد نہیں کی جاتی۔بارش کے نتیجہ میں ریاستی دارالحکومت حیدرآباد کواضلاع سے منتقل کی جانے والی مقامی سبزیاں متاثر ہوئیں۔ روزانہ سات کوئنٹل ٹماٹر حیدرآباد منتقل کیاجاتا ہے تاہم یہ تعداد اب چار ہزارکوئنٹل تک محدود ہوگئی ہے جس کے پیش نظر پڑوسی ریاستوں اے پی، کرناٹک اور مہاراشٹرسے بڑے پیمانہ پر سبزیوں کو درآمد کیاجارہا ہے ۔
اس بارش کے نتیجہ میں ٹماٹراگانے والے کسانوں کو شدید نقصان پہنچاجس کے نتیجہ میں مارکٹ آنے والے مقامی ٹماٹر کی تعداد گھٹ گئی۔دیگر ریاستوں سے سبزیوں کو درآمد کرنے کے نتیجہ میں سبزیوں کی کمی کا خدشہ ہے ۔اے پی کے دھون، کرنول، اننت پور،کلیانادُرگم،کرناٹک کے چنتامنی،مہاراشٹرکے لاتور،شولاپورسے 3398کوئنٹل ٹماٹر کو درآمد کیاگیا۔سبزیوں کی فصلوں کو ہوئے نقصان کے نتیجہ میں سبزیوں کی قیمتوں میں اضافہ ہوگیا ہے ۔