9/11سے متعلق تفتیش دستاویزات جاری 

9/11سے متعلق تفتیش دستاویزات جاری 

واشنگٹن: امریکی صدر جو بائیڈن کے ایگزیکٹو آرڈر پرفیڈرل بیورو آف انویسٹی گیشن (ایف بی آئی) نے 9/11دہشت گردانہ حملوں کی جانچ سے متعلق پہلے دستاویز جاری کئے اور ہائی جیکروں کے لئے سعودی حکومت کی مشتبہ مدد کو بھی عام کیا ہے 
خبر رساں ادارے اسپوتنک کے مطابق،ایف بی آئی نے کہا،”11ستمبر ، 2001کے دہشت گردانہ حملوں سے متعلق بعض دستاویزات کے ڈی کلاسی فکیشن جائزے پر امریکی صدر جو بائیڈن نے 3ستمبر 2021کو دستخط کیے تھے اور ان دستاویزات کو ان کے ایگزیکٹو آرڈر کے جواب میں عام کیا جا رہا ہے ۔“
ایف بی آئی الیکٹرانک مواصلاتی دستاویزات ہفتہ ، 4اپریل ، 2016کو جاری کیے گئے ۔ یہ دستاویزات مختلف لوگوں کے ساتھ رابطے کو ظاہر کرتے ہیں کہ 9/11طیاروں کو ہائی جیک کرنے والے دو افراد کا امریکہ میں سعودی اتحادیوں سے رابطہ ہوا تھا ، لیکن اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ سعودی حکومت اس سازش میں ملوث تھی۔امریکہ میں 9/11کے متاثرین کے خاندانوں نے طویل عرصے سے حکومت سے ، جو سعودی دہشت گرد ہوسکتے ہیں ان کے روابط سے متعلق معلومات عام کرنے کی گزارش کی تھی جنہوں نے 9/11حملے انجام دیئے تھے ۔
سعودی عرب ان حملوں سے متعلق امریکی حکام کی جانب سے ا±ن دستاویزات کے جاری کیے جانے کا خیر مقدم کرتی ہے جن کی رازادی ختم کر دی گئی ہے