چین نے اپنا پہلا سولر تحقیقی سیٹلائٹ خلا میں بھیجا

China launches first solar research satellite

چین نے اپنا پہلا سولر تحقیقی سیٹلائٹ خلا میں بھیجا

بیجنگ: چین نے اپنا پہلا سولر تحقیقی سیٹلائٹ خلا میں بھیج دیا ہے، جو مدار میں گردش کرتے ہوئے زمین کی فضا میں مختلف کثافتوں پر تحقیق کرے گا۔چینی خبر رسان ایجنسی شنہوا کے مطابق اس سیٹلا ئٹ کو جنوبی چین کے شان زی صوبے میں واقع تائی یو ا?ن سیٹلائٹ لانچ سینٹر سے خلا میں بھیجا گیا ہے۔لانچنگ کے بعد یہ سیٹلائٹ لانگ مارچ 2D راکٹ کی مدد سے کام یابی سے مدار میں داخل ہوچکا ہے۔شنہوا کے مطابق ان دس چھوٹے سیٹلائٹ میں ایک تجرباتی سیٹلائٹ بھی شامل ہے جو مدار میں گردش کرتے ہوئے زمین کی فضا میں مختلف کثافتوں پر تحقیق کرے گا۔ اس سے فضائی کیفیات کے بارے میں اہم معلومات مل سکے گی۔ ساتھ ہی ایک سیٹلائٹ ایسا بھی ہے جو موسمیاتی کیفیات کو نوٹ کرے گا۔واضح رہے کہ یہ تمام سیٹلائٹ ایک ہی راکٹ کے ذریعے خلا میں بھیجے جائیں گے۔ یہ چین کے لانگ مارچ کیرئیر راکٹ سیریز مشن کی 391ویں پرواز تھی۔